IMG_20160902_143305

 

فضلوں نے تیرے مالک وه دن هیں پھر دکھاۓ

مہدی کے تیرے مہمان دور دیسوں سے آۓ

 

رنگ و بو نرالے هر چمن کی بہار

گل و بلبلوں نے پھر یہ گلستان مہکاۓ

 

دہکائی پھر سے سب نے ایمان کی حرارت

“یہ دن چڑھا مبارک, مقصود جس میں پاۓ”

 

ذکر و ثناء تیری, درود بر آقا

سجود سے هیں یونہی روز و شب سجاۓ

 

تیرے خلیفہ نے خزائن کا کھولا باب

الفت کے نعروں میں امن کے علم لہراۓ

 

اس چراغ آشتی کو رکھنا پناه میں اپنی

ھر آن اس پہ رکھیو اپنے کرم کے ساۓ.

 

 

Fazlon nay teray maalik,Woh din hain phir dikha’ay

Mehdi k teray mehman,Doar daison saay a’ay

 

Rang o bu niralay,har chaman ki bahar

Gul o bulbulon ny phir, yeh gulistan mehka’ay

 

Dehkai phir sy subnay, eman ki hara’rat

“Yeah din charha mubarak,maqsood jismain pa’ay”

 

Zikar o sana teri, darood bar Aqqa

Sajoud say hain yunhi,roaz o shab saja’ay

 

Teray Khalifa ny khazain ka khola  baab

Ulfat kay naroun main amman ky alam lehra’ay

 

Is charagh e ashti ko rakhna panah main apni.

Har is pay rakheyo, apnay karam kay sa’ay

 

Advertisements