Search

Qalam and Chai

Think Dream Read and Repeat

Category

Poetry

پر

دنیا نیچے چھوڑنے کو لوگ لگائیں پر مٹی اندر جو رچی ہے وہ کون چھپائے پر سو سو رنگ بدلتے موسم من کے اندر سوئیں نیلے امبر کالے بادل تن میں سمائیں پر تلخ زبانوں سے کٹتے موتی بکھر کے... Continue Reading →

Advertisements

مولا تیرے آسمانوں میں 

سوتے کفل کئی گرتے پتوں کی طرح میرے خیال کے بیج گیلی شاخ پے رہنے والی اجلی نیلی تتلی جیسے پل دو پل کو ٹہر گئی جو ساون گرتے بہک گئی جو بن کر تارا تیرے چمن کا پھر جو... Continue Reading →

To Simpler days.

To them simpler days We never really got time to appreciate. to carefree mornings filled with affection a breakfast with Sunday’s kid’s special edition. To them simpler days when only aim Was to memorize each comic character’s name Days surrounded... Continue Reading →

The fallen stars of scungy sky

A fragmented picture, broken glass Cutting through skin like blades of brass Ebbing and aching beats Rusty eyes of menacing beasts With each falling leaf of time This world is experiencing a decline Moral mental emotional strive Mourning souls Lamenting... Continue Reading →

گفتار

. چمکتے جزبوں کی مدہم لو میں وصالِ جاناں کی پرچھائی خالی چہروں کے عکسِ نو میں کمالِ تلبیس کی دہائی۔ شیریں لفظوں کے کلمہ گو میں طلسمِ جدت کی تنہائی تڑپتے بسمل کی خشک بو میں محفل دیدار کی... Continue Reading →

جنہیں زندگی کی تلاش نے

ان بستیوں کے سب مکین جنہیں زندگی کی تلاش نے کئی راستوں کی گرد دی سرد ہوا کی آس نے تاریک و تاک رات نے چہرے سب عیاں کیئے سب لمحے وہ قضا کیئے فصیلِ دل کی دراڑ میں بادلوں... Continue Reading →

جفا کے قصے

کمال الفت کے راز ساقی شرابِ نفرت سے دُھل چکے ہیں فلق کی آغوش میں نیم رقصاں بابِ فرقت جو کُھل چکے ہیں تاریک راہوں کے سب مسافر عتابِ قربت کو تُل چکے ہیں کرشمہ ہائے جفا کے قصے مہرابِ... Continue Reading →

The struggle of soul.

In thick dense smog that shadowed the mind I waited for rain To brush the thoughts And aid the air to get inside, To feed the heart and cleanse the blood A relief that could soothe the itch in the... Continue Reading →

عالمی بیعت اور ایک احمدی کے جذبات

سب گناھوں کا غبار دھلتا جاتا هے اس کے افضال کا اک باب کھلتا جاتا هے میرے آقا کے لبوں سے جو هوتا هے ادا ھر اک حرف دعا میں ڈھلتا جاتا هے بیعت کا جو منظر هو ٹی وی... Continue Reading →

Powered by WordPress.com.

Up ↑

%d bloggers like this: